نِیل پڑنے کی پانچ وجوہات

کبھی کبھی کسی میز کا کونا لگ جانے سے، کسی کرسی سے ٹکرا جانے سے یا کسی معمولی سے ٹھوکر سے جسم کے متاثرہ حصے پر نِیل پڑ جاتے ہیں

نِیل ہے کیا؟
جسم کے کسی حصے پر چوٹ لگنے کی وجہ سے جلد کے اندر خون کی کسی نالی کو اس طرح نقصان پہنچنا کہ اس میں سے قلیل مقدار میں خون کا اخراج شروع ہو جائےاسی کو عمومی زبان میں نِیل کہا جاتا ہے

آپ مخصوص ادویات کا استعمال کر رہے ہیں:
بعض ادویات کے استعمال کی صورت میں بغیر کسی وجہ کے جسم کے کسی حصے پر نِیل پیدا ہونے کا احتمال بھی ہو سکتا ہے

آپ بوڑھے ہو رہے ہیں:
عمر ڈھلنے کے ساتھ جلد پتلی اور خون کی نالیاں کم زور ہو جاتی ہیں۔ اسی صورت میں جسم پر نِیل پڑنے کے امکانات میں اضافہ ہو جاتا ہے

ایک وجہ یہ بھی ہے کہ جسم سے چربی کی مقدار کم ہو جائے، تو بھی خون کی نالیاں کسی معمولی سی ٹھوکر سے بھی نقصان پہنچنے کا اندیشہ بڑھ جاتا ہے

 

آپ خون پتلا کرنے والی ادویات استعمال کر رہے ہیں:
اگر آپ خون کی نالیوں میں جمے ہوئے خون کو پتلا کرنے والی ادویات کا استعمال کر رہے ہیں، تو نیل پڑنے کا احتمال ہو سکتا ہے

آپ ذہنی تناؤ کے تدارک کی دوا لے رہے ہیں:
اگر آپ ڈپریشن کے خلاف فلیکسوٹین، سرٹرالین، سیلاٹوپرام یا بوپروپیون جیسی ادویات کا استعمال کر رہے ہیں
تو ممکن ہے آپ کسی معمولی چوٹ کی صورت میں اپنے جسم پر نِیل کا نشان دیکھیں


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *