ریویو: مسلمانوں کے لیے سلام پلینیٹ نامی سوشل میڈیا اپیلیکیشن متعارف

کوالالمپور: ملائیشیا کی ایک کمپنی نے مسلم اقدار کو مدنظر رکھ کر سلام پلینیٹ نامی سوشل میڈیا ایپلیکیشن متعارف کرائی ہے جو صارف دوست اور عمدہ فیچرز کی حامل قرار دی جا رہی ہے۔

موبائل ایپ اور ڈیسک ٹاپ ورژن میں دستیاب ’’سلام‘‘ براﺅزر میسجنگ، نیوز اور دیگر فیچرز سے لیس ہے اور فی الحال اس کے بیشتر صارفین کا تعلق ملائیشیا اور انڈونیشا سے ہے۔


مزید پڑھیں

مکسڈ مارشل آرٹ کے مسلمان چیمپئن پر نو ماہ کی پابندی، بھاری جرمانہ


سلام ویب ٹیکنالوجیز کی منیجنگ ڈائریکٹر حسنیٰ زرینہ محمد خان کا کہنا ہے کہ وہ ایک ارب 80 کروڑ مسلمانوں میں سے 10 فیصد لوگوں کی بتدریج اس ایپلیکیشن تک کی رسائی کو ہدف بنائے ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا ’’اس وقت ویب صارفین کو دنیا کی بڑی ٹیکنالوجی کمپنیوں گوگل، فیس بک وغیرہ سے چیلنجز کا سامنا ہے، جو کہ خطرناک مواد اور جعلی معلومات کے مسائل کے حوالے سے کچھ زیادہ اقدامات نہیں کر رہیں‘‘۔


مزید پڑھیں

پاکستان میں تھری/فور جی صارفین چھ کروڑ دس لاکھ سے زائد ہو گئے


انہوں نے مزید کہا ’’ہم انٹرنیٹ کو ایک بہتر مقام بنانا چاہتے ہیں، ہم جانتے ہیں کہ انٹرنیٹ میں اچھائی بھی ہے اور برائی بھی، سلام پلینیٹ ایک ایسا ٹول کی پیشکش کرتا ہے جس سے آپ کو انٹرنیٹ کی اچھائی دیکھنے کا موقع ملے گا‘‘۔

نئی ایپلیکیشن میں مواد کے لیے کمیونٹی ویٹڈ فلٹرز پر انحصار کرکے ویب پیجز کا تعین مناسب، غیرجانبدار اور نامناسب کے طور پر کیا جاتا ہے جب کہ فحش یا جوئے بازی پر مشتمل سائٹس تک رسائی پر صارفین کو انتباہ کیا جاتا ہے۔

سلام پلینیٹ نامی ایپلیکیشن میں مسلمانوں کے لیے مخصوص فیچرز جیسے نماز کے اوقات اور قبلہ رخ جاننا وغیرہ بھی موجود ہیں۔


مزید پڑھیں

چھوٹے بچوں کا موبائل فون کنٹرول کرنا اب ایپس کے ذریعے بھی ممکن ہے


ایپلیکیشن کو اوپن سورس کرومیم سافٹ وئیر پر تیار کیا گیا ہے جو کہ گوگل کروم ویب براﺅزر کی بھی بنیاد ہے۔

حسنی زرینہ کے مطابق اگرچہ سلام پلینیٹ ویب براؤزر مسلمانوں کو ذہن میں رکھ کر تیار کیا گیا مگر اسے ہر ایک استعمال کر سکتا ہے۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *