نیب نے صوبائی وزیر علیم خان کو گرفتار کر لیا، عہدے سے مستعفی

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کے رہنما، سینئر وزیر اور وزیر بلدیات پنجاب عبد العلیم خان کو لاہور نیب نے گرفتار کر لیا ہے۔

علیم خان کو آف شیور کمپنی اسکینڈل اور بیرون ملک اثاثہ اسکینڈل میں گرفتار کیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں

شہباز شریف بھی لندن میں فلیٹس کے مالک نکلے


وزیر بلدیات آخری بار نیب کے سامنے 10 اگست 2018 کو ہیش ہوئے تھے، بدھ کے روز دوبارہ پیشی پر وہ لاہور نیب کے آفس پہنچے تو ان کو گرفتار کر لیا گیا۔

صوبائی وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ علیم خان کی نیب میں یہ دوسری پیشی تھی جس میں انکی گرفتاری عمل میں آئی ہے۔

علیم خان نے اپنا استعفی وزیراعلی پنجاب کو بھجوا دیا۔


مزید پڑھیں

احتساب کا ہم سے حساب نہ مانگیں نا ہم پر غصہ نکالیں، پی ٹی آئی رہنما


علیم خان پر آمدن سے زائد اثاثوں کا الزام بھی ہے

عبدالعلیم خان تفتیش کے دوران منی ٹریل فراہم نہیں کر سکے تھے، نیب ان کوکل احتساب عدالت میں پیش کرے گا، نیب کی جانب سے عدالت کو علیم خان کے 15 روزہ ریمانڈ کی استدعا کی جائے گی۔

اپنی گرفتاری کے موقع پر علیم خان نے کہا کہ انہیں عدالت سے انصاف کی امید ہے، وہ اپنے خلاف مقدمات کا سامنا کریں گے۔

علیم خان کی گرفتاری کی خبر وزیراعظم عمران خان کو بنی گالہ میں موصول ہوئی۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *