پاک بحریہ کی امن مشقوں کا آغاز، 45 ممالک کی شرکت

کراچی: پاکستان بحریہ کی امن مشق 2019 کا آغاز ہو گیا ہے  جس میں پاکستان سمیت 46 ممالک کے پرچم لہرا کر مشقوں کا باقاعدہ آغاز کیا گیا۔

ترجمان پاکستان بحریہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان ان مشقوں کی میزبانی 2007 سے کر رہا ہے اور ہر دو سال بعد یہ مشقیں منعقد کی جاتی ہیں۔

حالیہ برس 8 تا دس فروری “ہاربر فیز” اور 12 فروری سے “سی فیز” کا آغاز ہو گا۔

مشقوں کے آغاز کی تقریب میں 46 ممالک کے پرچم لہرائے گئے، قومی ترانہ بجایا گیا اور پاک بحریہ کے چاک و چوبند دستے نے سلامی دی اور گن پاسٹ دیا۔


مزید پڑھیں

پاک بحریہ کے جہازوں کا ایرانی بندرگاہ کا دورہ


تقریب کے مہمان خصوصی پاکستان بحریہ کے فلیٹ ایڈمرل امجد خان نیازی تھے۔

اس موقع پر پاکستان بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی کی جانب سے جاری پیغام میں تمام شریک ممالک کا شکریہ ادا کیا گیا اور انہیں خوش آمدید کہا گیا۔

پاک بحریہ کے ترجمان کی جانب سے جاری پیغام میں کہا گیا ہے کہ مشقوں میں عالمی برادری مشترکہ بحری آپریشنز اور تجربات کا تبادلہ کرتی ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ مشقیں میری ٹائم تعاون اور میری ٹائم ماحول کے لیے اہم ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ملکی ترقی اور اقتصادی تعاون کے لیے سمندری حدود کا تحفظ لازمی ہے۔


مزید پڑھیں

مربوط قومی حکمت عملی کے تحت پاکستان کے خلاف ہر سازش ناکام بنائیں گے، آرمی چیف


انہوں نے کہا کہ جدید دور کے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے مل کر کوششیں کرنی ہوں گی۔ پاکستان بحریہ کی مشقوں میں پاکستان آرمی اور پاکستان فضائیہ کے طیارے بھی شامل ہوں گے۔

تقریب میں مختلف ممالک کے اعلی افسران سمیت سفارکاروں نے بھی شرکت کی۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *