گورنر اور وزیر اعلی سندھ میں کشیدگی عروج پر

کراچی:  سندھ میں مشیروں کی تعیناتی پر گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ آمنے سامنے آگئے ہیں۔

پروپاکستانی اردو کو ذرائع بتایا ہے کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نے مشیروں کی تعیناتی کے معاملے پر ایک دوسرے کی بھیجی گئی سمریاں روک لی ہیں۔


مزید پڑھیں

اینڈرائڈ صارفین کے اردو میں بولے گئے پیغامات اب خود ٹائپ ہوا کریں گے


ذرائع کے مطابق گورنر سندھ  نے اعجاز جاکھرانی کو وزیراعلیٰ کا مشیر بنانے سے متعلق سمری روک دی جس کے بعد پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت گورنر سندھ کے رویے پر ناراض ہو گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ صوبائی وزیر ناصر شاہ کوششوں کے باوجود بھی گورنر سندھ عمران اسماعیل کو نہ منا سکے۔


مزید پڑھیں

کراچی گرین لائن منصوبہ، حکومت سندھ کا وفاق پر عدم اعتماد کا اظہار


اس سے پہلے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ گورنر کی جانب سے اپنے مشیر کی تعیناتی کی سمری روک چکے ہیں، گورنر سندھ تحریک انصاف کے رہنما امید علی جونیجو کو اپنا مشیر بنانا چاہتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق گورنر کے مشیر کی تقرری کی سمری اڑھائی ماہ سے وزیراعلیٰ سندھ نے روک رکھی ہے، وزیراعلیٰ ہاؤس کی جانب سے موقف اپنایا گیا کہ گورنر سندھ کو اپنا مشیر مقرر کرنے کا قانونی اختیار نہیں۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *