انسٹاگرام نے ’حساس اسکرین‘ نامی اہم فیچر متعارف کرادیا

سان فرانسیسکو: 2017 میں انسٹاگرام پر 14 سالہ برطانوی لڑکی مولی رسل کی خودکشی کے بعد انسٹاگرام کی جانب سے پوسٹ کی شیئرنگ کے لیے نیا ’ حساس اسکرین‘ نامی فیچر متعارف کردیا گیا ہے جو سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر دلخراش مناظر، غصیلی اور خود کو نقصان پہنچانے والے مواد کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لیے لانچ کیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں

واٹس ایپ میں چیٹ کا یہ نیا فیچر آپ نے کتنا مفید پایا؟


عالمی میڈیا کے مطابق فیچر کا اعلان انسٹاگرام کے سربراہ ایڈم موسیری نے خود کیا ہے، اس فیچر سے زخم، قتل، خودکشی اور دیگر دلخراش مناظر کی تصاویر کو دھندلا کردیا جائے گا اور صرف خواہش مند صارفین کے بٹن دبانے پر ہی مذکورہ قسم کے مناظر دیکھے جاسکیں گے، اس طرح پیج پر اسکرولنگ کے دوران یہ مناظر اچانک سامنے نہیں آئیں گے۔

اس اہم فیچر کے تحت ایسی تمام تصاویر کو بھی بلاک کردیا جائے گا جس میں کوئی صارف خود کو نقصان پہنچاتا ہوا نظر آئے گا تاکہ کم عمر نوجوانوں منفی اثر لیتے ہوئے خود کو نقصان نہ پہنچالیں، جیسا کہ برطانیہ میں ہوا ۔


مزید پڑھیں

تصاویر سے متعلق واٹس ایپ کا نیا فیچر: وہ سب جو آپ جاننا چاہیں


یاد رہے کہ 2017 میں انسٹاگرام پر خودکشی کرنے والی برطانوی کمسن لڑکی مولی رسل کے والدین نے اس واقعے کی ذمہ داری انسٹگرام پر عائد کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ انکی بیٹی نے انسٹاگرام پر ایک شخص کی تصاویر سے خودکشی کا طریقہ سیکھا تھا۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *