سرفراز احمد کو میچ فکسنگ کی آفر کرنے والے کرکٹ آرگنائزر پر دس سالہ پابندی

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے پاکستانی کرکٹر اور کپتان سرفراز احمد کو میچ فکسنگ کی پیشکش اور ترغیب دینے والے سابق کھلاڑی اور شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم آرگنائزر عرفان انصاری پر دس سال کی پابندی عائد کر دی ہے۔

شارجہ میں آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کی بڑی کارروائی، سری لنکا سیریز 2017 کے دوران کپتان سرفراز احمد کو فکسنگ کی پیشکش کرنے والے سابق کرکٹر عرفان انصاری کو سزا، دس سال کی پابندی لگا دی گئی، عرفان انصاری اب کسی بھی کرکٹ سرگرمی میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

عرفان انصاری نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفرا احمد سے 2017 میں میچ فکسنگ کے لیے رابطہ کیا تھا۔

سرفراز احمد نے آفر کی اطلاع فورا آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کو دی تھی۔


مزید پڑھیں

پاکستان میں پی ایس ایل میچوں کے لیے ٹکٹ کی قیمت کم سے کم 500 روپے مقرر


شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم کے آرگنائزر پر آئی سی سی کے تین کوڈ کی خلاف ورزی کی وجہ سے سزا سنائی گئی ہے، آئی سی سی نے جرم ثابت ہونے پر عرفان انصاری کو 10سال تک کسی بھی طرح کی کرکٹ سے دور رہنے کا حکم دیا ہے۔

عرفان انصاری کو مئی 2018 میں آئی سی سی کی جانب سے معطل بھی کر دیا گیا تھا۔

کراچی سے ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے والے عرفان انصاری شارجہ میں کرکٹ اکیڈمی چلا رہے تھے، اس تاریخی سٹیڈیم میں سیریز کھیلنے کے لیے آنے والی مہمان ٹیموں کو نوجوان بولرز سمیت دیگر سہولیات فراہم کرتے تھے۔

مذکورہ فرد پر الزام  تھا کہ اس نے کھلاڑیوں کو میچ فکسنگ کے لیے اکسایا اور آئی سی سی قوانین کی خلاف ورزی کی، پاکستانی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کرکٹ باڈی کو بتایا تھا کہ انہیں میچ فکسنگ کی پیشکش کی گئی ہے جس کے بعد معاملے کی تحقیق کی گئی تھی۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *