سگریٹ پر گناہ ٹیکس عائد کرنے سے ریونیو میں 20 ارب روپے کمی کا خدشہ

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) نے سگریٹ پرگناہ ٹیکس عائد کرنے کی مخالفت کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اس اقدام سے ایف بی آر کے ریونیو میں 20 ارب روپے تک کمی کا خدشہ ہے۔


مزید پڑھیں

اب سیگریٹ کی پیداوار اور سپلائی کی مانیٹرنگ ہوگی!


فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے سینئرافسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر انکشاف کیا ہے کہ منی بجٹ کے ذریعے سگریٹ پر گناہ ٹیکس ایف بی آرکی مشاورت کے بغیر عائد کیا جارہا ہے اوراس ٹیکس کے نفاذ کے لیے جو طریقہ کار اختیار کیا جارہا ہے وہ غلط ہے۔


مزید پڑھیں

سگریٹ کے پیکٹ پر نئی تصویری تنبیہہ شائع کرنے کا حکم جاری


مذکورہ افسرکا کہنا ہے کہ اس اقدام سے ایف بی آرکے ریونیو میں 20 ارب روپے تک کمی کا خدشہ ہے جبکہ اس سے سگریٹ کی اسمگلنگ بھی بڑھنے کا امکان ہے۔


مزید پڑھیں

حکومت کا سگریٹ پر ’’گناہ ٹیکس‘‘ کو ’’صحت ٹیکس‘‘ میں بدلنے کا فیصلہ


افسر کا مزید کہنا ہے کہ اس طرح کی ٹیکسیشن منی بجٹ کے ذریعے نہیں ہونی چاہیے۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *