بھارت کے متعصبانہ رویے کے باعث ایشین اسنوکر ایونٹ منسوخ کردیا گیا

لاہور: پاکستانی کیوئسٹس کو ویزے نہ دینے پر بھارت میں اگلے ماہ ہونے والا ایشین اسنوکر ایونٹ منسوخ کردیا گیا ہے۔

ٹین ریڈز ایشین اسنوکر ٹورنامنٹ مارچ کے آخری ہفتے میں بنگلور میں شیڈول ہے لیکن ایونٹ کا حصہ 6 پاکستانیوں کو ویزے جاری کرنے کی یقین دہانی نہ کرانے پر اب ایونٹ کو ہی ختم کردیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں

پاک بھارت تجارت کی بندش سے بھارتی تاجر پریشان


یاد رہے کہ انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے تین دن پہلے تمام فیڈریشنز کو واضح طور پر کہا تھا کہ جب تک بھارتی حکومت ویزے دینے کی تحریری ضمانت نہیں دیتی، اس وقت تک بھارت میں کوئی بھی ایونٹ نہ کروایا جائے اور نہ مستقبل میں میزبانی دی جائے۔

انڈین اسنوکر اینڈ بلیئرڈ کے سیکرٹری سبرامنیم نے ایونٹ منسوخ ہونے کی تصدیق کی ہے۔


مزید پڑھیں

 تعصب کے خاتمے اور اولمپکس چارٹر کی پابندی یقینی بنانے تک بھارت کو کسی مقابلے کی میزبانی نہیں دی جائے گی


ترجمان  پاکستان اسنوکر فیڈریشن کے مطابق اس ایونٹ میں محمد بلال، بابر مسیح اور حارث طاہر نے پاکستان کی نمائندگی کرنی تھی، اس کے ساتھ قطر میں مقیم احمد شیخ بھی پاکستانی نیشنل ہے جب کہ افغانستان کے جس کیوئسٹ نے اس میں شرکت کرنا ہے، اس  کی پیدائش بھی پاکستان میں ہوئی، اس لیے انہیں ویزے ملنا ایک ایشو تھا جس کے بعد  ایشین سنوکر نے یہ ایونٹ منسوخ کردیا ہے۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *